Urdu Section

میرواعظ - الموسوی اور ظفر اکبر کی گھروں میں نظر بندی کی شدید مذمت

سرینگر19جون -- کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے حریت چیرمین جناب میرواعظ عمر فاروق صاحب جنہیں شوپیاں کا شرمناک سانحہ رونما ہونے کے ساتھ ہی گھر میں نظر بند کر کے بیس دن تک ان کی سیاسی اور مذہبی سرگرمیوں پر سرکار کی طرف سے قدغن لگانے پر زبردست ناراضگی اور برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج لگاتار تیسرے جمعہ بھی میرواعظ کشمیر کو نماز جمعہ جیسے اہم مذہبی فریضہ کی ادئیگی اور مرکزی جامع مسجد میں اپنے منصبی فرائض پورے کرنے سے روکا گیا۔ ترجمان نے میرواعظ کی گرفتاری کو بلا جواز اور سیاسی انتقام گیری کی بدترین مثال قرار دیتے ہوئے ان کے ساتھ ساتھ باقی محبوس اور گرفتار قائدین کی فوری رہائی کی ضرو

شہید ڈاکٹر قاضی نثار احمد اور مولانا ہمدانی کو ان کی برسیوں پر شاندار خراج عقیدت

                                                                                                   &nb

میرواعظ عمر فاروق کی آ ٓٓسٹریلیا کے سہہ رکنی وفد سے ملاقات

  سرینگر  25  // کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیرمین میرواعظ عمر فاروق نے سانحہ شوپیاں میں ملوث مجرموں کو فوراً پیش کرنے اور اس ضمن میں مجلس مشاورت شوپیاں کے احتجاجی پروگرام کی مکمل حمایت کرتے ہوئے 26جون بروز جمعہ پوری وادی میں گزشتہ ایک ماہ سے سراپا احتجاج اہلیان شوپیاں کے ساتھ یوم اظہار یکجہتی کا اعلان کیا ہے۔ اس سلسلے میں مرکزی جامع مسجد سرینگر میں جناب میرواعظ کی پیشوائی میں سب سے بڑا اجتماع منعقد ہوگا ۔ جناب

میرواعظ عمر فاروق اور ظفر اکبر بٹ پھر گھروں میں نظر بند کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت

 سرینگر 26جون -  کل جماعتی حریت کانفرنس کی طرف سے اہلیان شوپیاں کے ساتھ یوم اظہار یکجہتی کے پروگرام کے تحت وادی کے جملہ تحصیل ، ضلع صدر مقامات ، مختلف مساجد ،خانقاہوں اور امام باڑوں میں حریت قائدین اور ائمہ مساجد نے سانحہ شوپیاں میں ملوث مجرموں کی گرفتاری اور ان کو قرار واقعی سزا کی مانگ کے ساتھ ساتھ بعد ازنمازجمعہ پر امن احتجاجی مظاہرین کی قیادت کی ۔ جب کہ سرکاری انتظامیہ کی طرف سے حریت کے اس پروگرام کو ناکام بنانے کے لئے ایک طرف صرف دو دن کے وقفے کے بعد حریت چیرمین جناب میرواعظ عمر فاروق اور سرکردہ حریت رہنما جناب ظفر اکبر بٹ کو کو گھر میں نظر بند کر کے ان کی سیاسی اور مذہبی سرگ

طاقت اور کرفیو کا نفاذ کر کے سرکاری دہشت گردی کی نئی تاریخ رقم کی جا رہی ہے

سرینگر 29جون - کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیرمین جناب میرواعظ عمر فاروق نے سانحہ شوپیاں کے بعد وہاں جاری پر امن احتجاجی عوام کے خلاف پولیس اور سرکاری فورسز کی جبر و زیادتیوں اور ظلم و تشدد کو نا قابل قبول قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک طرف اس واقعہ میں ملوث مجرموں کی پردہ پوشی کر کے نام نہاد حکومت اپنی ناکامیوں کو چھپا رہی ہے اور دوسری طرف اس دلدوز واقعہ کے خلاف پر امن مظاہرین کو طاقت اور تشدد کے بل پر دبانے اور شوپیاں میں کرفیو کا نفاذ کر کے سرکاری دہشت گردی کی نئی تاریخ رقم کی جا رہی ہے

حریت رہنماء ظفر اکبر بٹ کی قیادت میں ایک وفدپٹن کے قریب گرفتار

    سرینگر 30جون  کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیرمین جناب میر واعظ عمر فاروق نے شوپیان ،بارہمولہ ،سوپور اور بانڈی پورہ میں پُرامن احتجاجی مظاہرین پر پولیس اور فورسز کی طرف سے جاری تشدداوربلاجوازفائرنگ جس کے نتیجے میں اب تک کئی نوجوان شہید ہوئے ہیں، جن میں بارہمولہ میں کل پولیس اور فورسزکی فائرنگ سے بلال احمد ،طارق احمد ملک اور محمد سلیم شامل ہیں اور متعددافراد زخمی ہوئے کی شدید الفاظ میںمذمت کرتے ہوئے اسے جمہوریت کے دعوئے داروں کے آمرانہ طرز عمل اورسرکاری دہش

نماز جمعہ کے اجتماعات میں مقررین ائمہ اور خطیب ظلم و زیادتی کیخلاف پرزور صدائے احتجاج بلند کریں

                                                                                                   &nb