Zaffer Bhat Welcome Norway PM’s statement with regards to resolution of Kashmir dispute, Dialogue only way forward to resolve lingering Kashmir dispute.

Srinager 08 Jan / The Jammu and Kashmir salvation Movement (JKSM) Chairman Zaffer Akber Bhat  hails the  statement of Norway’s Prime Minister with regard to the long pending dispute of Jammu and Kashmir and their offer to mediate the talks.

Zaffer said " Dialogue is the only way forward to resolve lingering Kashmir dispute which is the basic and main cause of  confrontation between two nuclear countries indo-pak.He said Erna Solberg' s statement on Kashmir disputerepresents aspiration and emotions of people of Kashmir in which hehas said that there is no military solution to Kashmir issue and if both India and Pakistan are willing, her country was ready to mediate.Zaffer said countries like uk,Norway,China  etc can be act as mediator between India and Pakistan to resolve lingering Kashmir dispute,so that peace prevail in South Asian region.
ظفر بٹ کا ناروے وزیراعظم کے مئسلہ کشمیر پر ثالثی کے بیان کا خیر مقدم،
مئسلہ کشمیر حل کرناوقت کی اہم ضرورت،مذاکراتی عمل واحد راستہ و آپشن ۔
سرینگر 08 جنوری/ 
سرکردہ حریت رہنما،جموں کشمیر سالویشن مومنٹ چیرمین ظفر اکبر بٹ نے ناروے کے  وزیراعظم کی طرف سے مئسلہ کشمیر کو حل کرنے کے لئے   ثالثی کی پیشکش کو خوش آئند اقدام قرار دیتے ہوئے کہا جس طرح انہوں نے مئسلہ کشمیر کو مذاکراتی عمل کے ذریعہ حل کرنے کی وکالت کی اور کہا مئسلہ کشمیر ایک انسانی و سیاسی مئسلہ ہے جس کو فوجی قوت اور دھونس و دباؤ کی پالیسی سے ہر گز حل نہیں کیا جاسکتا ہے ۔دراصل یہاں کے لوگوں کی جذبات و احساسات کی عکاسی کرتا ہے،
ظفر نے نئی دہلی کی سیاسی قیادت کو  اس انسانی مئسلہ کو  انسانی و سیاسی تناظر میں دیکھنے کی ضرورت ہے،
انہوں نے کہا ہندو پاک جوکہ جنوبی ایشائی خطہ کی دو بڑی ایٹمی  طاقتیں  اگر چہ  مخاصمت کی راہ پر گامزن ہے جس کی سب سے بڑی و بنیادی  وجہ مئسلہ کشمیر ہے،
انہوں نے کہا ناروے،برطانیہ وغیرہ جیسے ممالک مئسلہ کشمیر حل کرنے میں ایک اہم رول ادا کرسکتے ہیں،
ظفر نے کہا مئسلہ کشمیر کو مذاکراتی عمل کے ذریعہ حل کرنا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے،
اس دیرینہ  مئسلہ کو  مذاکراتی عمل کے ذریعہ جامع مذاکراتی عمل کے ذریعہ حل کیا جاسکتا جوکہ واحد راستہ و آپشن ہیں،
انہوں نے توقع ظاہر کی ہے کہ ناروے وزیراعظم اس مئسلہ پر سنجیدگی اور مثبت سوچ کے ساتھ اپنی سرگرمیاں شروع کریں گئے