ZAFFAR AKBER WELCOMES AMARNATH YATRIS, SUSPEND'S POLITICAL ACTIVITIES IN YATRA RELATED AREA'S, CONDEMNS LAL SINGH’S THREAT TO KASHMIRI JOURNALISTS

Srinagar 27 June / Senior pro-freedom leader and Jammu & kashmir salvation movement  (JKSM ) chairman Zaffar Akber Bhat on Wednesday welcomes Amarnath yatris as ‘our revered guest's, Suspend's  All political Activities on Yatra Related  routes and Area's  However He said social and  Peaceful  Political activities will continue on Other parts of Kashmir valley, 

He said that there was  no threat to the annual Amarnath Yatra as people of Kashmir are happily welcomes Hindu pilgrimage as our guests, while stressing that the pilgrims were "our revered guests", who would be received and treat Just like  Kashmiris  age-old traditions."He said that the we are not against any religion,Faith  or its followers. 

However people of Jammu and Kashmir  are pursuing a legitimate struggle for their Birth  rights," He said the people of Kashmir, while continuing with the age-old tradition of providing the best hospitality to the pilgrims, have always been friendly and generous to the visitors, particularly with the Amarnath yatris."The yatra has been going on for decades and the people here have treated the pilgrims with unique hospitality and happily receiving lakhs of yatris every year treating them as our guests and brothers and sisters,Zaffar said " They have always been hospitable, decent and received the pilgrims as their guests,"

He said "It is our age-old tradition and even in the future, we will follow this with the same spirit and receive the yatris as our revered guests," said  . Salvation movement is suspending All political Activities on Yatra Related routes and Area's  However our social and  Political activities would be continue in other parts of kashmir valley.

Zaffar Akber lashes out at lal Singh for threatening  Kashmiri Journalists, said "lal Singh is directly threatening Fourth pillar of democracy which is unacceptable and Highly deplorable, 

while condemns  his threatening journos  statement Demands Stringent Action and Arrest of lal Singh :He said "

 

ظفر اکبر نے امرناتھ یاترا کےشروع ہونے پر خوش آمدید، خیر مقدم کیا ، 

یاترا کے پیش نظر یاترا والے علاقوں میں تمام سیاسی سرگرمیاں معطل رکھنے کا اعلان، 

لال سنگھ کے صحافیوں کو دھمکی آمیز بیان پر شدید ردعمل، 

سرینگر 27 جون / سینئر مزاحمتی قائد، جموں و کشمیر سالویشن مومنٹ چئیرمین ظفر اکبر بٹ نے سالانہ امرناتھ یاترا کے شروع ہونے پر یاتری بھائی اور بہنوں کا تہہ دل سے خیر مقدم اور خوش آمدید کیا ہے، یاترا والے علاقوں میں تمام طرح کی سیاسی سرگرمیاں معطل رکھنے کا اعلان، اخبارات کے لئے جاری بیان کے مطابق امرناتھ یاترا کے شروع ہونے پر سالویشن مومنٹ چئیرمین ظفر اکبر بٹ نے یاترا پر آنے والے تمام ہندو بھائیوں اور بہنوں کا خیر مقدم اور خوش آمدید کیا ہے، 

انہوں نے یاترا کو مدنظر رکھ کر یاترا والے علاقوں میں تمام سیاسی سرگرمیاں معطل رکھنے کا اعلان کیا ہے، تاہم انہوں نے باقی علاقوں میں پارٹی کی سماجی و سیاسی سرگرمیاں جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے، انہوں نے کہا ہندو بھائی ہمارے مہمان ہیں جس طرح وادی کشمیر کی عوام طول و عرض میں ان کی مہمان نوازی دہائیوں سے کرتے آئے ہیں اسی طرح اس سال بھی انشاء اللہ کرتے رہے گئے، 

 ظفر اکبر نے کہا جس ہمت، شجاعت اور پامردی سے نامسائد و پر آشوب حالات کے دوران کشمیری عوام نے اپنی مہمانوں کی خدمت انجام دی وہ ایک عظیم سماج،  معاشرے، و زندہ قوموں کی علامت و نشانی ہے، انہوں نے کہا کشمیری عوام یاترا کے دوران ہر سال اپنی مہمانوں، یاتری کی جس قدر خدمت انجام دی رہے ہیں وہ واقعی انسانیت کی ایک زندہ مشال ہیں اور کشمیری عوام ان کی خدمات و ہر ممکن مدد فراہم کرنے کو فخر محسوس کرتے ہیں، انہوں نے کہا کشمیری مہمان نوازی اگر چہ صدیوں سے جاری ہے تاہم یاترا کے دوران جس انسانی جوش و خروش، جذبہ اور صادق دلی سے ہم اپنی ہندو بھائیوں کا خاص خیال و انتظام رکھتے ہیں وہ کشمیر کی عصری تاریخ میں ایک اہم و نمایاں مقام رکھتے ہیں، انہوں نے تمام مہمانوں کو بلا کسی خوف و دہشت، ڈر کے یہاں آنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا تمام کشمیری عوام اپ کی مہمان نوازی کی منتظر ہے اور آپ کی مہمان نوازی کے لئے مسرت و فخر محسوس کرتے ہیں، 

دریں اثنائ ظفر اکبر بٹ نے لال سنگھ کے حالیہ صحافیوں کے خلاف دھمکی آمیز بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ان کی سوچ و سمجھ کس قدر بگڑ چکے ہیں، جو اب وہ کھلے عام جمہوریت کے چوتھے ستون پر نہ صرف انگلی اٹھا رہے ہیں بلکہ کھلے عام دھمکی دی کے صحافیوں کی توہین کررہے ہیںجو کہ جمہوری، اخلاقی و انسانی قدروں کے منافی ہے اور جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے ، 

انہوں نے چوتھے ستون سے منسلک اعلی اداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ لال سنگھ کے خلاف فوراً سے پیشتر سخت ترین کارروائی عمل میں لائے تاکہ جمہوریت کے چوتھے ستون پر کسی قسم کی کوئی خوف و ہراس اور ڈر محسوس نہ ہو اور وہ آزادانہ طور پر اپنی تمام تر ذمہ داریاں احسن طریقے سے انجام دے۔