MINISTERS’ AND BJP LEADERS PARTICIPATION IN HINDU EKTA MANCH RALLY SHAMEFUL,;ZAFFAR AKBER,,EXPRESSES SERIOUS CONCERN OVER THE SHIFTING OF POLITICAL PRISONERS,

Srinagar 4 March: Jammu and kashmir salvation movement chairman Zaffar Akber Bhatt ,while criticizing the participation of two ministers said ,It was a shameful act on part of the government and the BJP ministers to have participated in the rally in favour of the accused. These ministers actually participated rally to threatening minority community of area, said it is strange that the ministers instead of supporting the investigation process are supporting the crime. “They are criminalizing the situation and creating the gap between two communities, Zaffar said
criminals and murderers who done and responsible for this heinous crime and murder must be hanged publicly, he strongly condemns this inhuman, undemocratic act,
Zaffar expresses anguish and castigated authorities for shifting of political prisoners
from central jail Srinagar to Jammu jail. Termed it frustrations and a political vendetta, expresses serious concern over the shifting of political prisoners from central jail Srinagar to Jammu jails ,Zaffar strongly condemned shifting of Kashmiri political prisoners to outside jails, he expressed serious concern over the plight of political prisoners languishing in various jails of India. he said oppression and repression unleashed against kashmiri detainees is highly condemnable ,its inhuman ,undemocratic and coercive tactics ,
Zaffar appealed United Nation, International human rights organizations and bodies to take serious note of political prisoners shifting and ill treatment and should take steps to release all political prisoners who are lashing in various jails in India,
Zaffar demands immediate shifting of all political prisoners back to their home land jails.
کٹھوعہ واقعہ میں ملوثین کی رہائی کے حق میں احتجاجی ریلی میں بی جے پی لیڈران اور ریاستی وزراء کی موجودگی پر ظفر اکبر بٹ کا شدید ردعمل اور مذمت،
اسیروں کی جموں منتقلی پر گہرے تشویش ظاہر کی ۔
4 مارچ سرینگر /
سینئر مزاحمتی قائد، جموں و کشمیر سالویشن مومنٹ چئیرمین ظفر اکبر بٹ نے کٹھوعہ عصمت دری اور قتل میں ملوثین کی رہائی میں حق میں احتجاجی ریلی میں شامل بی جے پی کے لیڈران و ریاستی وزیروں کی موجودگی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔
اخبارات کے لئے جاری بیان کے مطابق ظفر اکبر بٹ نے کٹھوعہ کی معصوم بچی
آصفہ کے عصمت دری اور قتل میں ملوث درندوں، شہوت کے عادی، انسانی شکل میں حیوانوں سے بتر کے حق میں احتجاجی مظاہرے میں شامل بےضمیروں اور بی جے پی کے لیڈران و ریاستی وزراء کی موجودگی پر ان کی شدید تنقید کی ہے،
ظفر نے اس انسانیت سوز واقعہ میں ملوثین کی رہائی کیلئے احتجاج کو فسطائی ذہنیت سے تعبیر کیا اور بی جے پی کے اس انسانیت سوز رویہ کی پر زور مذمت کی ہے، انہوں نے انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ وہ ملوثین کو قراری سزا دلانے کے لئے اقدامات اٹھائے اور اس احتجاج میں شامل لوگوں کے خلاف قانونی کارروائی کریں،
انہوں نے کہا دنیا کی امن پسند عوام اور جمہوری، انسانی اور اخلاقی قدروں میں یقین رکھنے والے لوگ حیران و انگشتہ بدنداں رہ گئے جب انسانی و اخلاقی قدروں کو پیروں تلے روندا گیا جب اس درندگی ،حیوانیت اور وحشی پن میں ملوثین کی رہائی کے حق میں احتجاجی ریلی نکالے گئے ۔
ظفر اکبر بٹ نے مزاحمتی رہنما محمد قاسم فکتو ،محمد شفیع شریعتی اور باقی اسیروں و قیدیوں کی سنٹرل جیل سرینگر سے جموں جیل کی منتقلی پر گہرے تشویش ظاہر کرتے ہوئے اس اقدام کی پر زور مذمت کی ہے، ظفر نے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا اسیروں و قیدیوں کو وادی سے باہر کی جیلوں کو مستقل کرنے کے پیچھے دراصل مقصد یہ ہے ان کو اپنے اہل خانہ سے دور رکھ کر ان کو ذہنی و جسمانی طور ٹارچر کا شکار بنایا جائے،
انہوں نے عالمی برادری اور عالمی اداروں سے مودبانہ اپیل کی کہ وہ کشمیری محبوسین ،اسیروں کی بگڑتی صحت کا سنجیدہ نوٹس لیں اور ان کی رہائی یقینی بنانے کے لئے اقدامات اٹھائے۔
انہوں نے اسیروں کو فوری وادی منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ہے