JKSM hails Pakistan PM

Press statementSrinagar, September 23, 2018:Dialogue is the only option to resolve the Kashmir issue, said JK Salvation Movement chairman on Sunday ,saying it is unfortunate that despite continuing bloodshed and political uncertainty in sub-continent ruling elite instead of dousing the fire are adding  more fuel to it .It is both in the interest of India and Pakistan to take sincere steps and make an end to this centuries old enmity .We hail Pakistan Prime minister for his dialogue offer and hope India would reciprocate in positive ,added Zafar.


Zafar asked asks India, Pak to observe restraint along border, warning that both countries are nuclear, and any mad armed race could lead to all-out war. He asked both the countries to take steps towards establishing an environment of stability and tranquility in the subcontinent.

He expressed deep disappointment over the recent development, wherein India rejected the dialogue offer and urged the Government of India to rethink the decision and take steps to resolve all mutual disputes through meaningful talks.


“It’s very unfortunate and it seems they were just looking for an excuse to cancel the talks,” Zafar said in his statement and stressed both countries to take into consideration the population in region facing poverty, illness, famine, draught and other problems.


 We favor only meaningful and result-oriented negotiations saying that the issue can be resolved through dialogue only,” he said in a statement.Spokesman


JK Salvation Movementسرینگر ستمبر 23 : سینئر حریت رہنماءاور جموں کشمیر سالویشن مومنٹ کے چیرمین ظفر اکبر بٹ نے بھارت اور پاکستان کے درمیان بڑھتے ہوئے تناﺅ اور سرحدوں پر کشیدگی پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جنگ کسی مسئلہ کا حل نہیں اور دونوں ممالک کو وسیع تر مفاد کے لئے بات چیت کا سلسلہ پھر شروع کرنا چاہئے ۔اپنے بیان میں اس بات پر زور دیا مسئلہ کشمیر ایک بنیادی مسئلہ ہے اور سبھی فریقین کو اس کے دائمی ،مستقل اور قابل قبول حل کے لئے کام کرتے ہوئے آگے بڑھنا چاہئے۔انھوں واضح کیا جنگ کسی کے مفاد میں بھی نہیں کیونکہ دونوں ممالک کے پاس جوہری ہتھیا ر ہیںاور ایک معمولی سی چنگاری بھڑک اٹھی تو برصغیر اس آگ میں جھلس جائے گا ۔انھوں پاکستان کی طرف سے مزاکرات کی دعوت اور اس میں ان کی پہل کو خوش آئندہ قرار دیتے ہوئے بھارتی حکام پر زور دیا کہ وہ معمولی واقعات کی آڑ میں اپنے منفی اپروچ کے بجائے مثبت پہل کرے۔

ظفر اکبر بٹ نے دونوں ممالک کو جنگ کی مہم جوئی سے بچنے کی تاکید کرتے ہوئے کہا برصغیر میں پہلے ہی سے تناﺅ کی صورت حال کا سامنا ہے اور اس آگ کو مزید بڑھکانے کے بجائے ہمیں اسے ختم کرنے کے لئے اقدامات اٹھانے کے لئے پہل کرنا چاہے اور ایک دوسرے سے تعاون کے جزبے کے ساتھ آگے بڑھنا چاہئے۔انھوں نے امید ظاہر کی کہ بھارت پاکستان کی جانب سے مزاکرات کی پیش کش کے لئے مثبت اپروچ کا اظہار کرتے ہوئے اپنی آمادگی کا اظہار کرے گا ۔

انھوں نے دونوں ممالک کو جنگ ذدہ ذہنیت کا مظاہرہ کرنے کے بجائے ٹھنڈی سوچ و فہم کا مظاہرہ کرنے کی دردمندانہ اپیل کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے رہنماﺅں کو برصغیر میں قیام امن ،سیاسی بے یقینی اور عوام کی فلاح و بہبود کی خاطر اقدامات اٹھانے چاہئے اور فوجی مصارف پر بے پناہ اخراجات کے بجائے بھک مری ،بیماری ،غربت کے خاتمے ،طبی سہولیات بہم پہنچانے اور بنیادی سطح سے لے کر اوپر تک تعلیم فراہم رکھنے کو اولین ترجیح دینی چاہئے

انھوں نے حالیہ واقعات پر اپنے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہماری نادانیوں سے معصوم عوام کی جانیں جارہی ہیں اور عوام کے زخموں پر مرہم رکھنے کے بجائے ہم مزید گہرے گھاﺅ دے رہے ہیں اور اس بات کو دوہرایا کہ جنگ اور تباہی کی منصوبہ بندی کے بجائے مسئلہ کشمیر سمیت سبھی معاملات کا نپٹاراصرف بات چیت میں مضمرہے ۔

 ترجمان 

جے کے سالویشن مومنٹ