JKSM condemns arrest of party chairman, Zaffer Bhat pays tributes to Gaw Kadal martyrs

Srinagar 21 Jan: Jammu and Kashmir salvation Movement (JKSM)  has strongly condemned the arrest of party chairman, Zafar Akbar  Bhat , Gazi Baba, Manzoor Ahmad and Muhammad Ayub . Paying glowing tributes to the martyrs of Gaw Kadal massacre on their 28th martyrdom anniversary, the Jammu and Kashmir salvation Movement (JKSM) Chairman Zaffer Akber Bhat on Sunday  has said  that Gaw Kadal Srinagar was the first major massacre during Kashmir’s ongoing resistance movement when the  forces opened fire at unarmed civilian protestors, martyring 52 among them.

Zaffer Also paid Glorious tribute's to Siraj-i-din -Misger brother in law of prominent Armed struggle commander   Mushtaq Zarger on 27th Anniversary.

He said Siraj disappeared in forces custody before two and a half decade but still don't know his  whereabouts,

He  said that it is imperative upon the people of Kashmir to show commitment and steadfastness towards the movement in order to realize the mission of the martyrs. He said that 28 years had passed since the massacre, but neither had any probe been ordered into the massacre nor the guilty nabbed and punished.

He urged international community and world rights bodies  to use their good offices for the justice to the victim families  and  the resolution of Kashmir issue.

پریس ریلیز 

سرینگر جنوری20: شہداءگاﺅ کدل کو ان کی 28ویں برسی پر خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے سالویشن مومنٹ کے چیرمین اور سینئر حریت قائد ظفر اکبر بٹ نے اپنے بیان میں کہا کہ ریاست کی تاریخ تحریک آزادی کے دوران یہ اس قسم کا پہلا سنگین اور دلدوز واقعہ ہے ،جس میں بھارتی فورسز نے بربریت اور ظلم و جبر کے سارے ریکارڈ توڑ کر 52معصوم لوگوں کی جانیں لیں۔

ظفر اکبر نے اپنے بیان میں تحریک آزادی کے نامور جانباز مشتاق احمد ذرگر کے برادر نسبتی شہید سراج الدین مسگر کی27ویں برسی پر خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ فورسز کی تحویل میں غائب ہوئے ۔انھوں نے اس بات اپنے دلی صدمے کا اظہار کرتے ہوئے کہا دو دہائیوں سے زائد عرصہ گزرنے کے باوجود فورسز ان کے بارے میں کچھ بتانے سے قاصر ہے ۔انھوں نے شہید مسگر کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ان شہادتوں کے امین ہونے کی حثییت سے رواں جدوجہد کے ساتھ اپنی والہانہ وابستگی کے اظہار میں اور آگے بڑھنا ہوگا تاکہ شہداءنے جس مقصد کی خاطر اپنی عزیز جانوں کو نچھاور کیا ہے ، اس مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جاسکے۔

انھوں نے گاﺅ کدل واقع کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ28سال کا عرصہ گزرنے کے باوجو بھی قاتلوں کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی گئی اور نہ ہی انہیں اس بات کے لئے جوابدہ بنایا گیا کہ انھوں نے انسانی جانوں کو کس بنا پر گولیوں سے بھون ڈالا۔

ظفر اکبر نے اپنے بیان میں بین الاقوامی برادری سے ان بہیمانہ اور انسانیت سوز کاروائیوں کی تحقیقات کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ ان متاثرہ گھرانوں کو انصاف فراہم کرنے اور ریاستی عوام کو ان کا بنیادی حق دلانے میں اپنا فرض منصبی نبھائیں ۔

ترجمان  جموں کشمیر سالویشن مومنٹ