Illegal detention of innocent Kashmiris needs to be stopped in IOK

 Islamabad4, March: Indian illegal detention of Innocent Kashmiris needs to be stopped. International Humanitarian Organizations must step in to save the lives of thousands of innocent Kashmiri people from Indian detention camps.President Jammu Kashmir Salvation Movement and Senior Hurriyat Leader Altaf Ahmed Bhat in a statement condemned the illegal and unjustified arrest of 50-year-old Tariq Ahmed Shah and his 23-yr-old daughter Insha Jan from Lethpora Indian Occupied Jammu and Kashmir by National Investigation Agency (NIA). Despite the offer of support to investigate Pulwana Attacks by Pakistan, Indian agencies are trying to find lame excuses to hurt and traumatize innocent Kashmiris. Bhat added,
 
President JKSM Altaf Ahmed Bhat further said that India agencies and the army has illegally arrested thousands of Youth just to destroy their future, and to suppress Kashmiri Freedom Movement, which India has failed over the past seven decades. Kashmiris are a brave nation and their sacrifices and struggle are immense, Kashmiris will never surrender due to Indian and Modi's nazist tactics.
Talking to Media Senior Kashmiri Hurriyat Leader Bhat appealed International organizations to Intervene, while urged big powers to speak up against the atrocities and suppression of Kashmiris in Indian Occupied Jammu and Kashmir. Indian draconian laws such as the Public Safety Act,  have given unlimited and unlawful rights to the agencies and army, and they are using those to illegally detain innocent Kashmiris.
Thousands of mass graves have been identified and reported to International Humanitarian organizations, but no practical implications and support are shown in this regard. The young and old whoever are detained by Indian agencies end up in mass graves, psychological trauma, or handicapped. Bhat added."
Despite the harshest laws, illegal detentions, and suppression, Kashmiri People are steadfast in the Freedom Movement, their commitment and sacrifices will never go in vain and Kashmiris will get freedom as per the resolutions of United Nations i.e Right to Self Determination.
President JKSM Altaf Ahmed Bhat while telling about the facts and figures of the recent month of February 20 said that, The facts and figures are truly alarming, During the month of February 2020, 10 people are killed, total custodial killings 3, People tortured/Injured are 30, while 138 civilians were 
اسلام آباد: () 
صدر جموں کشمیر سالویشن موومنٹ اور سینئر حریت رہنما الطاف احمد بٹ نے کہا ہے کہ معصوم کشمیریوں کی بھارتی غیر قانونی نظربندی روکنے کی ضرورت ہے۔ بین الاقوامی  ہیومن رائٹس  کی تنظیموں کو بھارتی نظربند کیمپوں سے ہزاروں بے گناہ کشمیریوں کی زندگیاں بچانے کے لئے قدم اٹھانا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنے جاری ہونے والے بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ لیتھ پورہ بھارتی مقبوضہ جموں و کشمیر سے 50 سالہ طارق احمد شاہ اور اس کی 23 سالہ بیٹی انشا جان کی غیرقانونی اور بلاجواز گرفتاری کی شدید الفاظ میں  مذمت کرتے ہیں۔ پاکستان کی جانب سے پلوانا حملوں کی تحقیقات کیلئے معاونت کی پیش کش کے باوجود ، بھارتی ایجنسیاں بے گناہ کشمیریوں پر تشدد کرنے کے لیے انکا بے گناہ خون بہا رہی ہے۔  ہندوستانی ایجنسیوں اور فوج نے ہزاروں نوجوانوں کو غیر قانونی طور پر صرف ان کے مستقبل کو تباہ کرنے ، اور کشمیریوں کی آزادی کی تحریک کو دبانے کے لئے گرفتار کیا ہے جبکہ کشمیریوں کی آواز کو دبانے میں بھارت گذشتہ سات دہائیوں میں بھی ناکام رہا ہے۔ کشمیری ایک بہادر قوم ہیں اور ان کی قربانیاں اور جدوجہد سے پوری دنیا آشنا ہو چکی ہے۔ کشمیری ہندوستانی اور مودی کی نازی چالوں کی وجہ سے کبھی ہتھیار نہیں ڈالیں گے بین الاقوامی تنظیمیں فوری طور پر مقبوضہ کشمیر میں فوری مداخلت کرکے انسانی حقوق کی خلاف ورزی  
کو روکنے میں اپنا کردار ادا کریں جبکہ بڑی طاقتوں سے بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں مقبوضہ کشمیریوں کے مظالم اور مظالم کے خلاف بات کریں۔
 پبلک سیفٹی ایکٹ جیسے بھارتی قوانین نے بھارتی ایجنسیوں اور فوج کو مزید طاقت ور بنا دیا یے اور وہ ان کو بے گناہ کشمیریوں کو غیر قانونی طور پر نظربند کرنے کے لئے استعمال کررہے ہیں۔ بین الاقوامی انسانی حقوق کی تنظیموں کو ہزاروں اجتماعی قبروں کی نشاندہی اور ان کی اطلاع دی جا چکی ہے ، لیکن اس سلسلے میں کوئی عملی مضمرات اور تعاون ظاہر نہیں کیا گیا ہے۔ نوجوان اور بوڑھے جس کو بھی بھارتی ایجنسیوں نے حراست میں لیا ہے وہ اجتماعی قبروں ، نفسیاتی صدمے یا معذور افراد جیسی زندگیاں گزارنے پر مجبور ہو چکے ہیں۔ سخت ترین قوانین ، غیرقانونی نظربندیوں اور جبر کے باوجود کشمیری عوام آزادی کی تحریک میں ثابت قدم ہیں ، ان کا عزم اور قربانیاں کبھی رائیگاں نہیں جائیں گی اور اقوام متحدہ یعنی حق خود ارادیت کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کو آزادی حاصل ہوگی۔ صدر جے کے ایس ایم الطاف احمد بٹ نے حالیہ ماہ 20 فروری کے حقائق اور اعدادوشمار کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ ، حقائق اور اعداد و شمار واقعی تشویشناک ہیں ، فروری 2020 کے مہینے میں 10 افراد شہید ہوئے جبکہ 3 افراد کو بدترین  تشدد کا نشانہ بنایا  اسی طرح 30 افراد شدید زخمی ہیں ، جبکہ 138 شہریوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔