ہ ہم اس دن کے شدت سے منتظر ہیں جب پاکستان کے کھلاڑی اور بچے سرینگر،جموں لداخ اور پلوامہ میں جاکر کھیلیں گے

 اسلام آباد() ممتاز حریت پسند کشمیری رہنما الطاف احمد بٹ نے کہا ہے کہ ہم اس دن کے شدت سے منتظر ہیں جب پاکستان کے کھلاڑی اور بچے سرینگر،جموں لداخ اور پلوامہ میں جاکر کھیلیں گے ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں پاکستان سپورٹس کمپلیکس میں 19ویں نیشنل نیٹ بال چیمپئین شپ 2020 کے فائنل میں فاتح ٹیموں کے درمیان انعامات تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا،الطاف احمد بٹ نے کہاکہ آزادی کی نعمت سے آج آپ کھلاڑی بچے اس طرح سے کھیل پرفارم کررہے ہیں جبکہ مقبوضہ کشمیر کے بچوں کے کھیلوں کے میدان اور سپورٹس کمپیلکسز پہ بھارتی مسلح افواج کا قبضہ ہے ،انہوں نے کہا کہ میں یہاں پہ محکوم مگر بہادر کشمیریوں کی آواز ہوں، آپ سب وعدہ کریں کہ آپ کشمیر کی آزادی کیلئے اپنا کردار ادا کرینگے ،نوجوانوں کے پاس سوشل میڈیا کا ایک  ایسا  ہتھیار ہے جو بھارتی مظالم کو اجاگر کرنے میں استعمال کرکے اس کا نیوکلئیر سے زیادہ فائدہ اٹھایا جاسکتا ہے ،الطاف احمد بٹ نے مزید کہا کہ حکومت پاکستان اور مسلح افواج کشمیر کا کیس ہر فورم پہ کر رہی ہے ،ہم حق پہ ہیں، آزادی ہمارا مسملہ حق ہے جسے اقوام متحدہ نے تسلیم کررکھا ہے، ہمیں پاکستان کے نوجوانوں اور کھلاڑیوں کی ضرورت ہے جو کھیل کے ہر عالمی میدان میں کشمیر کیلئے آواز بلند کریں, کشمیری تکمیل پاکستان کی جنگ کررہے ہیں، آپ بچے کمپیوٹر، موبائل ،ویب اور دیگر میڈیم کے ذریعے بھارت کا مکروہ چہرہ دنیا کے سامنے لائیں، کشمیری صرف ریفرنڈم اور حق خودارادیت کی بات کرتے ہیں جسکا اختیار انہیں اقوام متحدہ نے دیاہواہے ،اس حق پہ قراداد پہ پاکستان  اور بھارت کے وزرا اعظم نے دستخط کررکھے ہیں، ہمیں بھارت کے حکمرانوں کو بتانا ہوگا کہ اگر وہ سلامتی اور امن چاہتے ہیں تو پھر انہیں اپنے وزیراعظم جواہر لال نہرو کے وعدے پہ عمل کرنا ہوگا ،آپ کی یہ ذمہ داری ہے کہ آپ کشمیر کے ان بچوں اور نوجوانوں کیکئے آواز اٹھائیں جن کی آواز کو دبایا جارہا ،جن کے بنیادی حقوق سلب ہیں،کشمیر،لداخ کپواڑہ کے بچوں کا بھی حق ہے کہ وہ سکول جائیں، آزادی سے رہیں اور آپ کی طرح  تعلیم حاصل کریں، کھیل کود کریں مگر وہاں اسکے برعکس ہے- سات ماہ سے سکول مکلمل بند ہیں دس لاکھ بھارتی فوجیوں نے مقبوضہ جموں کشمیر لداخ کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کیا ہے- آخر میں الطاف احمد بٹ نے ٹیموں میں انعامات تقسیم کیے ،جبکہ ہال کشمیر بنے گا پاکستان کے نعروں سے گونجتا رہا ۔
Islamabad  (    ) Sindh won both titles Men and Women in the Inter Provincial Netball Championship while Punjab has also got 2nd positions in the both events. Kashmiri Freedom Seeker and President, CBR  Employees Housing Society, Altaf Ahmed Butt was the chief guest and gave away the Trophies, Medals and Certificates to the teams and players. Altaf Butt expressed that we are waiting for that day when these players will play Netball with the players of Jammu Kashmir in Srinager, Jammu and Ladakh. But it is only possible after the freedom of jammu Kashmir from Indian Occupation. the Students of Jammu Kashmir also want to be the international players in every game but the Indian occupation and hurdles don’t allow us to make the bright future of State of Jammu Kashmir at international level. At the Occasion The President, Pakistan Netball Federation, Mudassar Arain, Secretary General Syed Gohar Raza, President, Huma Football Club Syed Zakir Hussain Naqvi who is also the Associate Secretary CBR  Employees Housing Society and a large number of peoples were also present on the occasion.
In the men final,  Sindh beat Punjab by 17-15 goals and in the third position match Gilgit defeated Islamabad by 16-10 goals. In the Women  final, Sindh beat Punjab by 13-7 goals and in the 3rd position match, KPK beat Gilgit by 5-2 goals. SIx teams took part in the Championship namely Punjab, Sindh, KPK, Islamabad,  AJK and Gilgit.