کولگام میں جماعت اسلامی کا اجتماع ،ہزاروں لوگوں کی شرکت

 Kashmir Uzma خالد جاوید
کولگام ()//جماعت اسلامی جموں وکشمیر کی طرف سے کولوگام میں ایک دینی اجتماع کا انعقاد کیا گیا جس میںہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔اس موقعے پر جماعت اسلامی کے زعمائ نے مختلف موضوعات پر تقاریر کرکے اجتماع میں موجود لوگوں کو محضوض کیا۔ جماعت اسلامی ضلع کولگام کا سالانہ اجتماع منعقد ہوا جس میں ایک محتاط اندازے کے مطابق 40ہزار سے بھی زیادہ لوگوں نے شرکت کی۔جو گزشتہ کئی سالوں سے جماعت کا سب سے بڑا دینی اجتماع تھا۔ضلع انتظامیہ کی جانب سے بھی لوگوں کی سہولیات کےلئے کئی انتظامات کئے گئے تھے جبکہ جماعت اسلامی کے 450رضاکار سنیچر کی صبح سے ہی اپنی خدمات انجام دینے میں لگے ہوئے تھے۔جتماع میں 27ہزارافراد کےلئے کھانے پینے کا انتظام کیا گیا تھا۔اجتماع میں جماعت اسلامی سے وابستہ مقررین نے مختلف موضوعات پر بصیرت افروز خطابات کئے۔اجتماع کی کاروائی صبح کے 10بجے تلاوت کلام پاک سے شروع ہوئی جس کے بعد امیر جماعت اسلامی شیخ محمد حسن نے درس قرآن مجید کا فریضہ انجام دیا۔درس قرآن کے بعد سابقہ قیم جماعت اسلامی محمد عبداللہ وانی نے ،”اسلام ہی انسانیت کا ضامن“عنوان پر ایک بصیرت افروز خطاب کیا۔اپنے خطاب کے دوران انہوںنے واشگاف الفاظ میں کہا کہ اگر دنیا واقعی امن کی متلاشی ہے تو عالمی لیڈروں کو بغیر تعصب کے اسلام کے جھنڈے تلے جمع ہوجانا چاہیے۔اس موقعے پر ماون قیم جماعت اسلامی نذیر احمد رعنا نے ،”اتر کر حرا سے سوئے قوم آیا“کے عنوان پر سیرت النبی ? پر ایک فکر انگیز خطاب کیا۔اجتماع میں خطاب کرنے والے دوسرے علمائ میں امیر ضلع اسلام آباد احمد اللہ پرے،غازی معین الاسلام اور پیر عبدالرشید بھی شامل ہیں۔اجتماع کی کاروائی شام 5.30بجے اختتام پذیر ہوئی۔واضح رہے کولگام جماعت اسلامی کا گڑھ مانا جا تا ہے اور کشمیر میں اخوان دور کے دوان یہاں لوگوں کو سخت تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔