کشمیری اپنا آج آپ کے کل پر قربان کررہے ہیں

 اسلام آباد(   )پاکستان کی ممتازسیاسی و سماجی شخصیت، سینئر حریت رہنمااورسی بی آر کو آپریٹو ہائوسنگ سوسائٹی کے صدر الطاف احمد بٹ نے کہا  ہے کہ کشمیری اپنا آج آپ کے کل پر قربان کررہے ہیں ان کی آواز بنئے، جتنی آج انکو آپ کی اور آپکو انکی ضرورت ہے اس سے قبل کبھی نہیں تھی ، کشمیر کی آزادی تکمیل پاکستان اور اسکی خوشحالی اوربقاء کیلئے ضروری ہے ،آپ کشمیریوں کیلئے بیشک نہ تڑپیں ،لیکن اپنے پانی کو بچانے  کیلئے آپ کو ضرور اٹھنا اور لڑناہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس اسلام آباد میں ایشین کلچر ایوارڈ زکی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب میں سینئر صحافیوں ، کالم نویسوں ، کا روبا ری شخصیات کو حسن کا رکردگی ایوارڈ دئیے گئے ،الطاف احمد بٹ نے کہا کہ آج کشمیرلہو لہان ہے کل کا کشمیر سر سبزو شاداب تھا۔اور آج وہاں دھوئیں اور خون کے بادل ہیں کشمیریوں کا یہ پاکستان سے عشق ہے کہ انہوں نے شریعت کے بر خلاف اپنے شہداء کو پاکستانی سبز ہلالی پرچم میں لپیٹ کر دفن کرنا شروع کردیا ۔اگر پھر بھی پاکستان اور پاکستانیوں کے دل میں ان کیلئے جذبہ نہیں جاگتا تویہ لمحہ فکریہ ہے، یہ مذاق نہیں ہے کہ کوئی نہتا شخص 8لاکھ افواج کے سامنے پاکستانی پرچم لہرائے اور پھر وہ ایک لمحے میں  پیلٹ گنز سے اندھا ، اپاہج اور شہید ہوجائے ،آج کشمیریوں کی آواز بننا ہم سب کی ذمہ داری ہے کشمیر پکار رہا ہے اور یہاں سے کوئی مظبوط ،کوئی مثبت آواز اس پار نہیں جاتی ، الطاف بٹ نے کہا کہ میاں نواز شریف نے جب اقوام متحدہ میں تقریر کی تھی تو بھارت تلملا اٹھا تھاآج سوشل میڈیا کی بدولت یورپی یونین ،برطانیہ ، اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کمیٹیاں بھارتی مظالم کو بے نقاب کررہی ہیں  جس سے مودی سرکار دھل گئی اور اس نے تحریک آزادی کو زیادہ زور سے کچلنا شروع کردیا ہے ،لیکن افسوس یہ ہے کہ پاکستانی پرنٹ اور الیکٹرک میڈیا اپنا کردار ادا نہیں کررہا، آج کشمیر ی چارج ہیں ، مظفر وانی کی شہا دت نے اس تحریک کو تیز کردیا ہے ،چھوٹے بچے اور بچیاں قربانیاں دے رہی ہیں ، انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے کشمیر پر کام کیا ہے وزیر اعظم جناب عمران خان نے جب اپنی وکٹریتقریر کی تو اسمیں کشمیر کا ذکر تھا جس سے مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کو نئی جلاملی ،کشمیریوں میں نیا ولولہ پیدا ہوا۔ اس طرح وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے جب اقوام متحدہ میں تقریر کی تو بھارتی ایوان میں لرزا طاری ہوا اس سے بھی کشمیریوں کے اندر نیا عزم پیدا ہوا ۔الطاف احمد بٹ نے حاضرین محفل اور قوم کے ضمیروں کو جھنجوڑتے ہوئے کہا کہ حکومت پاکستان سے لیکر عوام تک میں کشمیر بارے آگاہی پیدا کرنے کی ضرورت ہے ،انہوں نے تجویز دی کہ اگر دنیا بھر میں موجود پاکستانی سفارتخانوں میں کشمیر ڈیسک بنا دیئے جائیں تویورپ ، امریکہ ، برطانیہ اور دوسرے ممالک میں بسنے والے کشمیری اور پاکستانی تارکین وطن اپنے طور پر بھارتی مظالم کو بے نقاب کرینگے ۔ان سے کام لینے کیلئے کوئی نظم و ضبط قائم کرنا پڑے گا اس طرح پاکستانی میڈیا بھارتی مظالم کو بے نقاب کریگا،پاکستانی سوشل میڈیا بھارت کیخلاف آواز اٹھانی چاہیے ۔آپ دیکھ لیں کہ ابھی تک کشمیر کمیٹی کا کسی کو چیئرمین نہیں لگایا گیا ، ان حالات میں یہ عہدہ خالی چھوڑنا درست نہیں ،کشمیر کمیٹی  کا چیئرمین بھی کسی کشمیری کو لگانا چاہیے ۔تاکہ وہ دنیا میں بہتر انداز میں کشمیر کا کیس لڑسکے انہوں نے آخر میں عوام ، سیاسی جماعتوں اور حکومت پاکستان سے اپیل کی ہے آئیں جلتے ہوئے کشمیر کو بچانے کیلئے اپنے اپنے حصے کا کام کریں قبل ازیں تقریب میں کشمیر پرمحی الدین ڈار ،اور خالد گردیزی کی بنائی گئی ڈاکو منٹری دکھائی گئی، بھارتی مظالم کو دیکھ کر ہر آنکھ اشکبار ہوگئی، تقریب میں لوک فنکاروں ، گلو کاروں اورکامیڈینز نے پر فارم کیا تقریب کا انعقاد ایشین کلچر ایسوسی ایشن کے سیکرٹری جنرل سید سہیل بخاری نے کیا حاضرین نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ سہیل بخاری کو قومی ایوارڈ دیا جائے ۔ایوارڈ حاصل کرنیوالوں میں سینئر صحافی ، مدیر اور کالم نگار عقیل احمد ترین ، شمشاد مانگٹ ،زاہد فاروق ملک ،شرجیل احمد،اسلم رضا، عاشق سہو، کاروباری شخصیت سردار عظیم ،مشتاق عسکری ،عاطف بخاری سیمت درجنوں افراد شامل ہیں  تقریب میں پی ٹی وی کے سینئر اداکار راشد محمود ،شیخ متین ، احمد میر ،حماد میر ،قاری احمد اسلام بھی موجود تھے

 

آج جو پلوامہ میں خونریزی بھارتی سفاک فوجیوں نے کی ہے عالمی ادارے فورًا اسکا نوٹس لیں اور تحقیقاتی کمیشن مقرر کریں تاکہ یہ جو معصوم کشمیریوں کا قتل عوام ایک تسلسل کے ساتھ کیا جارہا ہے اس کو روکا جا سکے اور آج کے واقعے میں ملوث فوجیوں کو سزادی دی جائے