ظفر اکبر 7 روز نظر بندی کے بعد شبیرشاہ اور ننھا جی سےملاقات

رینگر//حریت کانفرنس کے سینئر رہنما و چیرمین سالویشن مومنٹ ظفر اکبر بٹ کو 7 روز کی مسلسل نظر بندی کے بعدجونہی رہا کیا گیا تو وہ سینئر حریت رہنما شبیر احمد شاہ کی رہائش گاہ تشریف لے گئے جہاں انہوں نے ان سے ملاقات کی اور ا±ن کی رہائی کو قوم کیلئے ایک نیک شگون قرار دیا تاکہ قوم پھر ایک بار اتحاد و اتفاق کی عظیم نعمت سے مالا مال ہو کر پورے جوش و جزبے کے ساتھ اپنے مقصد حصولِ آزادی جموں وکشمیر میں کامیاب و کامران ہو جائے۔
 دریں اثناءظفر اکبر حریت پسند رہنما اور لبریشن فرنٹ (راجباغ) کے جنرل سیکٹری محمد سلیم عرف ننھا جی کی جیل سے رہائی کے موقعہ پر ا±ن کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرنے کیلئے ا±ن کے دولت خانہ تشریف لے گئے۔ انہوں نے ننھاجی کی رہائی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی سرکار کو چاہے کہ مختلف قید خانوں میں سالہا سال سے بند پڑے دیگر تمام کشمیری حریت پسند قیدیوں کو فی الفور رہا کرے تاکہ یہ ثابت ہو جائے کہ بھارت مسئلہ کشمیر کے پ±ر امن حل کیلئے حقیقی طور مخلص ہے۔ جناب ظفر اکبر بٹ نے آلوچی باغ کا بھی دورہ کیا جہاں انہوںنے حال ہی میں زیر حراست شہید منظور احمد بیگ کے اہل خانہ کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا اور ا? تعالیٰ کے حضور شہید بیگ کیلئے دعائِ مغفرت کی